اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد کے سربراہ کا متحدہ عرب امارات کا دورہ

اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد کے سربراہ نے ابوظہبی میں متحدہ عرب امارات کے سیکیورٹی سربراہ سے ملاقات کی ہے۔

اماراتی نیوز ایجنسی کے ایک سرکاری عہدیدار نے بتایا کہ موساد انٹیلی جنس ایجنسی کے ڈائریکٹر یوسی کوہن نے منگل کے روز ابو ظہبی میں متحدہ عرب امارات کے قومی سلامتی کے مشیر تہنون بن زید سے ملاقات کی ہے۔

پیر کو پہنچنے والے موساد سربراہ کوہن ، اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے مابین تاریخی معاہدے کے کلیدی کردار ادا کرنے والے تھے ، اور جمعرات کے روز اس معاہدے کے اعلان کے بعد ابوظہبی کا سرکاری دورہ کرنے والے پہلے سینئر اسرائیلی عہدیدار ہیں۔

ذرائع کے مطابق کوہن نے "سلامتی کے شعبوں میں تعاون” اور بن زید کے ساتھ علاقائی پیشرفت کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔

ذرائع کے مطابق کہ بن زید نے بڑھتے ہوئے تعلقات کو فروغ دینے میں کوہن کے کردار کی بھی تعریف کی جس میں متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین امن معاہدے کی کامیابی میں اہم کردار ادا کیا۔

اسرائیل کی طرف سے کوہن کے سرکاری دورے کے حوالے سے کوئی بیان نہیں آیا۔

اسرائیل اور متحدہ عرب امارات نے گزشتہ ہفتے اعلان کیا تھا کہ وہ امریکہ کے تعاون سے ہونے والے ایک معاہدے کے تحت مکمل سفارتی تعلقات استوار کر رہے ہیں۔ اس کے معاہدے کے بدلے میں اسرائیل نے مغربی کنارے کے بڑے حصوں کو اسرائیل سے منسلک کرنے کے منصوبوں کو معطل کرنے پر اتفاق کیا تھا۔

ذرائع کے مطابق آئندہ ہفتوں میں اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے مابین سیکیورٹی اور تجارتی تعلقات استوار کرنے جا رہے ہیں۔

اس ہفتے کے آخر میں ابوظہبی میں اسرائیل کے ایک بڑے وفد کے سرکاری دورے کی بھی توقع کی جا رہی ہے۔

 

 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment