روسی حزب اختلاف کے رہنما کی چائے میں زہر ملا دیا گیا

روسی  حزبِ اختلاف کے اہم رہنما الیکسی نوالنی کی ترجمان ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ الیکسی نوالنی مبینہ طور پر زہر دیا گیا ہے اور وہ اس وقت ہسپتال میں ہیں۔

ترجمان کے مطابق ایک فضائی سفر کے دوران اچانک بیمار پڑ گئے اور ان کی فلائٹ کو ہنگامی لینڈنگ کرنا پڑی۔

ترجمان کا ٹویٹ بیان میں کہنا تھا کہ ان کی ٹیم کو شک ہے کہ حزب اختلاف کے رہنما الیکسی نوالنی کو ان کی چائے میں زہر ملا کر دیا گیا۔ ترجمان نے مزید کہا کہ الیکسی نوالنی اس وقت انتہائی نگہداشت یونٹ میں ہیں۔ ان کے دعوؤں کی آزادانہ تصدیق نہیں ہوئی ہے۔

خیال رہے حزب اختلاف کے رہنما الیکسی نوالنی صدر ولادیمیر پوتن کے سخت ترین ناقدین میں سے ایک ہیں اور بدعنوانی کے خلاف ایک تحریک چلا رہے ہیں۔

الیکسی نوالنی کی ترجمان کرا یرمش نے بتایا کہ آج صبح الیکسی نوالنی ٹومسک سے ماسکو واپس آ رہے تھے جب پرواز کے دوران وہ اچانک بیمار ہو گئے طیارے کو اومسک میں ہنگامی لینڈنگ کرنا پڑی۔ 

روسی حزب اختلاف کے رہنما الیکسی نوالنی کی وجہ شہرت روس کے موجودہ صدر ولادی میر پوتن کی پالیسیوں کے خلاف آواز اٹھانا اور ان کی مبینہ ہدعنوانی کو منظرِ عام پر لانا ہے۔

 

 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment