اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ، حکومت بے بس

دعووں کے باوجود حکومت مہنگائی پر قابو پانے میں ناکام یو چکی ہے، ایک ہفتے میں بیس اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا-

حالیہ ہفتے کے دوران جب ایک طرف حکومت عوام کے سامنے اپنی دو سالہ کارکردگی پیش کررہی تھی تو وہیں دوسری طرف مہنگائی میں اضافہ ہورہا تھا-

وفاقی ادارہ شماریات نے مہنگائی کے حوالے سے ہفتہ وار رپورٹ جاری کردی جس کے مطابق بیس اگست کو ختم ہونے والے ہفتے کے دوران مہنگائی میں صفر اعشاریہ نو چھ فیصد اضافہ ہوا-گزشتہ ہفتے بیس اشیائے ضروریہ مہنگی ہوئیں-ملک میں چینی کی قیمتوں میں اضافے کا سلسلہ بھی بدستور جاری ہے ۔

ادارہ شماریات کے مطابق حالیہ ہفتے میں چینی اوسط چالیس پیسے فی کلو مہنگی ہوئی, چینی کی قیمت 95.67 سے بڑھ کر اوسط قیمت96.07 روپے فی کلو ہوگئی- بجلی چارجز فی یونٹ 36 پیسے بڑھ گئے۔

اسی طرح  چکن برائلر مرغی ساڑھے پانچ جبکہ ٹماٹر ڈیڑھ روپے فی کلو مہنگےہوئے-آٹا،آلو،دودھ،دہی,چھوٹا اور بڑا گوشت، چاول،دال چنا،دال مسور،لہسن اورگڑ مہنگا ہوا-

ادارہ شماریات کے مطابق ایک ہفتے کے دوران 9 اشیا کی قیمتوں میں کمی ہوئی-انڈے 9 روپے فی درجن، پیاز 2 روپے اور دال مونگ 3 روپے فی کلو جبکہ ایل پی جی کا گھریلو سلنڈر 7 روپے سستا ہوا-اسی عرصے کے دوران 22 اشیا کی قیمتوں میں استحکام رہا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment