مسئلہ کشمیر پر مسلسل حامیت پرترک حکومت اور عوام کا شکریہ: علی امین گنڈا پور

اسلام آباد: وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین خان گنڈاپور نے ترک کوآپریشن اینڈ کوآڈیشن ایجنسی کے کنٹری ہیڈ مسٹر گوخان امت سے ملاقات کی۔ 

ملاقات میں دونوں ممالک کے مابین قائم بردارانہ تعلقات پر تفصیلی بات چیت کی گئی اور مختلف شعبوں میں دونوں ممالک کے درمیان جاری تعاون سے متعلق امور کا جائزہ لیا گیا۔

علی امین گنڈاپور نے کہا کہ ترک صدر طیب اردگان نے مسئلہ کشمیر پر ہمیشہ واضح موقف اپنایا ہے، مسئلہ کشمیر پر مسلسل حامیت پرترک حکومت اور عوام کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ ترکی اور پاکستان کے درمیان دہائیوں پرانے بردارانہ تعلقات مزید مضبوط ہو رہے ہیں۔ گلگت بلتستان میں سیاحت کے شعبے میں بیرونی سرمایہ کاری کے بہترین مواقع موجودہیں۔ 

علی امین گنڈاپور نے مزید کہا کہ ترک سرمایہ کار گلگت بلتستان میں سرمایہ کاری سے بے حد فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ ہر سال تقریباً 20 لاکھ مقامی سیاح گلگت بلتستان آتے ہیں۔ گلگت بلتستان میں ہوٹلنگ اور تفریح کی سہولیات فراہم کرکے بیرونی سرمایہ کار فائدا اٹھا سکتے ہیں۔ گلگت بلتستان میں اکنامک زون کا قیام بھی عمل میں لایا جارہا ہے۔ گلگت بلتستان پاکستان کا اکنامک حب بننے جا رہا ہے۔ 

علی امین گنڈا پور کا مزید کہنا تھا کہ اکنامک زون سےگلگلت بلتستان میں صنعتی ترقی کی نئی رائیں کھلیں گی۔ ترک حکومت گلگت بلتستان اور صوبہ خیبر پختنخواہ کے جنوبی پسماندہ علاقوں کی خوشحالی میں اہم کردار ادا کرسکتی ہے۔

اس موقع پر گوخان امت کا کہنا تھا کہ سوشل سیکٹر، خصوصی طورپر صحت اور تعلیم کے شعبے میں پاکستان کے ساتھ مل کرکام کر رہے ہیں۔ پاکستانی عوام کی خوشحالی کے لیے سوشل سیکٹر میں تعاون کے لیے ہر وقت تیارہیں۔

کنٹری ہیڈ مسٹر گوخان کا مزید کہنا تھا کہ ترک سرمایہ کاروں کی پاکستان میں سرمایہ کاری کے حوالے سے خصوصی حوصلہ افزائی کررہے ہیں۔ مستقبل میں دونوں ممالک کے درمیان تعاون میں مزید اضافہ ہو گا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment