مریم نواز نے کس بات پر نواز شریف سے ضد لگا لی؟

نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ کی رہنما مریم نواز نے کہا ہے کہ نواز شریف علاج کے مکمل ہوتے ہی پاکستان واپس آئیں گے۔ نواز شریف اور میرے اوپر جھوٹے مقدمات بنائے گئے، اگر نواز شریف عدالتوں میں پیش ہو سکتا ہے تو کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیشی کے موقع پر لیگی رہنما مریم نواز نے استقبال کے لئے آئےکارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا موجودہ حکومت نے اپنا جو نقصان 5 سال میں کرنا تھا وہ 2 سال میں ہی کر بیٹھی ہے، ہم اپنے قائد نواز شریف کی ہدایت پر عمل کریں گے۔

انہوں نے کہا میرا نہیں خیال نواز شریف ھمیں اے پی سی میں جانے سے منع کریں گے، ہم آل پارٹیز کانفرنس میں جائیں گے، مکافات عمل تو شروع ہونا ہی تھا، ہر چیزکا اپنا ایک وقت مقرر ہوتا ہے۔

مریم نواز کا کہنا تھا نواز شریف کا لندن میں علاج چل رہا ہے، میری نواز شریف سے ضد ہوگی کہ جب تک علاج نہیں ہو جاتا تب تک واپس نہ آئیں، نواز شریف وطن واپس آنے کے لیے بہت بے چین ہیں، ھم. سبکو اپنے بارے میں نہیں بلکہ پاکستان کے بارے میں سوچنا چاہیے، صبح سے بارش ہو رہی ہے، میں امید نہیں کر رہی تھی کہ اتنے لوگ ساتھ آئیں گے۔

مسلم لیگ کے رہنما اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا حکومت کی اصلیت آپ کے سامنے ہے، بیریئر لگا کر مریم نواز کو روکا گیا، کیوں ؟ ایم این ایز اور ایم پی ایز بارش میں کھڑے ہیں، آج عوام کو دبایا جا رہا ہے، آج عوام پر انصاف کے دروازے بند ہیں، پولیس، رینجرز اور ایف سی کو کھڑا کر کے عوام کو روکا جا رہا ہے، حکومت ایک خاتون کو برداشت نہیں کرسکتی، عوام کو کیسے کریگی۔

مریم نواز نے کہا کہ عاصم سلیم باجوہ کیخلاف انکوائری سے سی پیک کو کوئی خطرہ نہیں ہے، ان پر جکرپشن کے الزامات لگائے گئے ہیں، اس انفرادی معاملے پر عاصم باجوہ کوجواب دینا چاہیے ۔عاصم سلیم باجوہ کے معاملے پرعمران خان آگے بڑھیں۔

شاہد خاقان عباسی نے مزید کہا دنیا میں کہیں عدالتوں کے دروازے بند نہیں کیے جاتے، موجودہ حکومت میں ہائیکورٹ کے دروازے بند کر دیئے گئے، وہ دن دور نہیں جب یہ بیریئر نہیں رہیں گے، ملک آج پولیس سٹیٹ بن چکا ہے، ایک خاتون پیشی پر آئی، بھاری فورسز یہاں تعینات ہیں۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment