بھنگ کی کاشت کے لائسنس ملنے کا غلط تاثر لیا گیا، فواد چوہدری

وفاقی وزیرفواد چوہدری کا کہنا ہے کہ بھنگ کے پودوں کی کاشت کا لائسنس ملنے کا غلط تاثر لیا گیا۔ یہ پودے ادویات اور ٹیکسٹائل انڈسٹری میں استعمال میں لائے جائیں گے۔

وزارت سائنس و ٹیکنالوجی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر فواد چوہدری کا کہنا تھاکہ بھنگ کے پودوں کے فوائد پر 1983 سے تحقیق جاری تھی۔ جنگوں میں فوجیوں کے اعضا کٹ جائیں یا شدید درد اور ذہنی دبائوکے مریضوں کے لئے یہ پودے اہم کردارادا کرتے ہیں۔ چین میں چالیس ہزار اور کینیڈا میں ایک لاکھ ایکڑرقبے پریہ پودے کاشت کیے جاتے ہیں۔ 

فواد چوہدری نے کہاکہ بھنگ کے پودوں سے بنا فائبرٹیکسٹائل انڈسٹری کے لیے مفید ہے۔ کوشش ہے اگلے تین برسوں میں بھنگ انڈسٹری سے ایک ارب ڈالر حاصل کریں۔ کپاس کی پیداوارکم ہونے کی وجہ سے بھنگ اس کی ضروریات کو پورا کرسکے گی تاہم بھنگ کی پرائیویٹ کاشت کی اجازت نہیں ہوگی۔ 

وزیرسائنس وٹیکنالوجی کاکہنا تھا کہ ہمارے پاس آپشن موجود ہے کہ بھنگ کی کاشت سے آئل بنا کرایکسپورٹ کریں۔ مرگی کے مرض اور درد کے مسائل کی ادویات کی تیاری میں اس کے تیل کا استعمال ضروری ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment