مذہبی جلوس پر حملہ کرنے والے ملزم کی ضمانت مسترد

سپریم کورٹ نے مذہبی جماعت کے جلوس پر حملہ کرنے کے الزام میں نامزد ملزم جوہر حسین کی گواہوں کے بیان قلمبند نہ ہونے کی بنیاد پر ضمانت مسترد کر دی۔

کراچی میں 2012 میں دو مذہبی گروپوں کے درمیان تصادم سے متعلق کیس کی سماعت جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کی۔ ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل سندھ نے عدالت کو بتایا کہ کیس کے گواہوں کے بیان 21ستمبر سے ریکارڈ کرنا شروع کر دینگے۔ کیس کا مرکزی گواہ اورنگزیب فاروقی ویڈیو لنک کی سہولت دینے کہ باوجود بیان ریکارڈ نہیں کرا رہا۔ کیس کے 39 گواہ تھے جن میں سے 10 کے بیان ریکارڈ ہو چکے ہیں۔

ملزم جوہر حسین پر 2012 میں مذہبی جماعت کے جلوس پر حملہ کرنے کا الزام ہے حملے کی وجہ سے 6 لوگ جانبحق اور 3 زخمی ہوئے تھے ملزم 2014 سے جیل میں ہے۔کیس کی سماعت ایک ہفتے تک ملتوی کردی گئی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment