اراکین پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری 2018 جاری

ایف بی آر نے اراکین پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری 2018 جاری کردی سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے سب سے زیادہ 24 کروڑ 13 لاکھ 29 ہزار 362 روپے ٹیکس ادا کیا وزیر اعظم عمران خان نے 2 لاکھ 82 ہزار 449 روپے، شہباز شریف نے 97 لاکھ 30 ہزار 545 روپے اوربلاول بھٹو زرداری نے 2 لاکھ 94 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے کوئی ٹیکس ادا نہیں کیا۔

ایف بی آر نے اراکین پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری 2018 جاری کردی ہے جس کے مطابق 2018 میں وزیر اعظم عمران خان نے 2 لاکھ 82 ہزار 449 روپے ٹیکس ادا کیا اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے 97 لاکھ 30 ہزار ، بلاول بھٹو زرداری نے 2 لاکھ 94 ہزار اور آصف علی زرداری نے 28 لاکھ 91 ہزار 455 روپے ٹیکس ادا کیا اراکین قومی اسمبلی میں سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے 24 کروڑ 13 لاکھ 29 ہزار 362 روپے ٹیکس ادا کرکے سرفہرست رہے جب کہ نجیب ہارون نے 14 کروڑ روپے ٹیکس ادا کرکے دوسرے نمبر پر رہے۔

حماد اظہر نے ذاتی آمدن سے 22 ہزار جب کہ کمپنی کے ذریعے 5 کروڑ 94 لاکھ 21 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا ، عمر ایوب نے دو کروڑ 60 لاکھ روپے، صالح محمد خان نے ایک کروڑ 26 لاکھ 74 ہزار ، شیخ فیاض الدین نے ذاتی آمدن سے ایک کروڑ 38 لاکھ 61 ہزار اور کاروباری آمدن سے 4 لاکھ 43 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا۔

ن لیگ کے خواجہ آصف نے 43 لاکھ 71 ہزار، اسپیکر اسد قیصر نے ذاتی آمدن سے 5 لاکھ 37 ہزار اور کمپنی کے ذریعے 57 لاکھ 90 ہزار 500 روپے ٹیکس ادا کیا ، خسرو بختیار نے 6 لاکھ 24 ہزار، اسد عمر نے 53 لاکھ 46 ہزار، اورغلام سرور خان نے 10 لاکھ 46 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا شیخ رشید احمد نے 5 لاکھ 79 ہزار ، فواد چوہدری نے 16 لاکھ 98 ہزار ، مونس الہی نے 51 لاکھ 68 ہزار، شاہ محمود قریشی نے ایک لاکھ 83 ہزار، رانا ثناء اللہ نے 13 لاکھ 88 ہزار ، فخر امام نے 52 لاکھ اور نور الحق قادری کمپنی کے ذریعے 35 لاکھ 6 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا۔

سینیٹ میں وزیر قانون فروغ نسیم 3 کروڑ 51 لاکھ 35 ہزار روپے ٹیکس ادا کرکے سرفہرست رہے سینیٹرسجاد طوری نے ایک کروڑ 70 لاکھ ، تاج محمد آفریدی دو کروڑ 81 لاکھ اور سینیٹر طلحہ محمود دو کروڑ 92 لاکھ 10 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا فاروق نائیک نے 64 لاکھ روپے سینیٹر رضا ربانی نے ذاتی آمدن سے 16 لاکھ اور کاروبار سے 26 لاکھ روپے کا ٹیکس ادا کیا جب کہ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے 13 لاکھ 63 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا

صوبائی وزرائے اعلی میں وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار نے کوئی ٹیکس ادا نہیں کیا وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے ذاتی آمدن سے 10 لاکھ 22 ہزارجب کہ کاروبار سے 63 لاکھ 57 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا وزیر اعلی بلوچستان جام کمال نے 48 لاکھ 8 ہزاراور وزیر اعلی خیبرپختونخواہ محمود خان نے 2 لاکھ 35 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا 

اراکین پنجاب اسمبلی میں حمزہ شہباز شریف نے 87 لاکھ 5 ہزار، علیم خان نے 91 لاکھ 93 ہزار، شیخ علاوالدین نے ذاتی آمدن سے ایک کروڑ 4 لاکھ 19 ہزاراورکاروبارسے 5 کروڑ 14 لاکھ 82 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا  

2018 میں کئی اراکین اسمبلی نے ٹیکس ادا نہیں کیا وفاقی وزیر فیصل ووڈا ، عامر کیانی ، سینیٹر فیصل جاوید ، رانا مقبول احمد، شمیم آفریدی ، محسن داوڑ ، عبدالشکور ، شیخ راشد شفیق، ثناءاللہ مستی خیل ، علی گوہر خان ، صاحبزادہ محموب سلطان ، صاحبزادہ امیر سلطان ، مخدوم ظہور حسین قریشی ، مخدوم زین حسین قریشی ، خواجہ شیراز محمود ، ابراہیم خان اورسید علی حیدر گیلانی نے کوئی ٹیکس ادا نہیں کیا جب کہ حیران کن طور پر سردار یار محمد رند نے 400 روپے اور کنول شوذب نے 165 روپے ٹیکس ادا کیا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment