گلگت بلتستان میں اصلاحات ایک انتظامی معاملہ ہے، دفترخارجہ

ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں اصلاحات ایک انتظامی معاملہ ہے۔ بھارت کے پانچ اگست کے اقدامات کی بنیاد پر نہیں گلگت بلتستان کے عوام کی خواہشات کے مطابق اصلاحات لائی جارہی ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے ہفتہ وار بریفنگ کے دوران کہا کہ وزیراعظم اور وزیر خارجہ ورچوئلی اجلاس میں شرکت کر رہے ہیں۔ وزیراعظم کل 25 ستمبر کو جنرل اسمبلی اجلاس میں خطاب کریں گے۔پاکستان نے کشمیریوں کے ماورائے عدالت قتل کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کیا  ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان سمجھتا ہے کہ بھارتی فوج کا بیان مظالم اور جرائم کا اعتراف ہے۔ پاکستان کی طرف سے بار بار کہنے کے باوجود بھارت نے اب تک جودھ پور میں گیارہ پاکستانی ہندوؤں کے قتل کی تحقیقات سے آگاہ نہیں کیا۔ بھارت جانے والے ہندووں کی سیکیورٹی کے حوالے سے شدید تحفظات کا اظہار کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ کرتارپور راہداری صرف اور صرف سکھوں کے مذہبی جذبات کے پیشِ نظر کھولا گیا۔ اب دوبارہ ایس او پیز کے تحت کرتارپور کھول دیا گیا ہے۔ بھارت میں دیگر تفریحی مقامات کھولے جا رہے ہیں مگر کرتارپور بند ہے۔ 

ترجمان کا کہنا تھا کہ بھارت کی جانب سے ایل او سی پر کلسٹر اسلحہ اور پیلٹ گنز کا استعمال غیر قانونی اور بین الاقوامی کنوینشنز کے منافی ہے۔کلبھوشن جادیو کا معاملہ عدالت میں ہے،پاکستان نے کمانڈر کلبھوشن جادیو کے حوالے سے عالمی عدالت انصاف کے فیصلے پر عملدرآمد کیا ہے۔ کیس کے از سر جائزے تک پھانسی پر حکمُ امتناعی رہے گا عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کے تحت کیس کا ازسرنو جائزہ لیا جارہا ہے۔

 ترجمان نے واضع کیا کہ اسرائیل کو تسلیم کرنے کا معاملہ زیر غور نہیں ہے،ھم دو ریاستی حل کے حامی ہیں، فلسطین کی آزاد ریاست جس کا القدس الشریف دارالحکومت ہو نا چاہیے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment