تںخواہوں میں اضافے کے لیے سرکاری ملازمین کا شاہراہ دستور پر احتجاج

تںخواہوں میں اضافے کا مطالبہ لئے سرکاری ملازمین کا ایک بار پھر وفاقی کابینہ اجلاس کے موقع پر شاہراہ دستور پر مارچ و احتجاج کیا۔

وفاقی دارلحکومت میں ایک بار پھر وفاقی سرکاری ملازمین نے تنخواہوں میں اضافے کے لئے سر اٹھا لئے۔ وفاقی کابینہ اجلاس کے موقع پر تنخواہوں میں اضافے کا مطالبہ لئے ایک بار پھر وزارت خزانہ کے سامنے سے احتجاج کرتے ہوئے وزیراعظم دفتر کا رخ کیا تاہم اسلام آباد انتظامیہ نے وزیراعظم دفتر سے قبل ہی روک کر مزاکرات کرتے ہوئے مزید دو روز کی مہلت مانگ لی۔

سربراہ وفاقی سیکرٹریٹ ایمپلائز کور کمیٹی رحمان باجوہ کے مطابق مشیر خزانہ سے ملاقات نہ کروائی گئی تو آئندہ منگل وفاقی کابینہ اجلاس کے موقع پر احتجاج کا سلسلہ دوبارہ شروع ہوگا، ھمارے حقوق پر سمجھوتا نہیں ہو گا۔

وفاقی سیکرٹریٹ ملازمین تنخواہوں میں اضافے ومساوی حقوق کیلئے پہلے بھی 32 روز تک مسلسل وزارت خزانہ کے سامنے دھرنا دے چکے ہیں، جبکہ رواں ماہ 15 اور 22 ستمبر کو بھی وزارت خزانہ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment