نواز شریف کی تقریر پر پابندی لگائی جائے یا نہیں، عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا

اسلام آباد ہائیکورٹ میں نوازشریف کی تقریر پر پابندی کے لیے دائر درخواست پر سماعت کے دوران عدالت نے درخوست قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے پرفیصلہ محفوظ کر لیا۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے نوازشریف کی تقاریر پر پابندی کیلئے دائر درخواست پرسماعت کی۔ درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ نوازشریف نے حالیہ تقریر میں ملکی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کی جس کے باعث ملکی اداروں کا وقار مجروح ہوا۔ نوازشریف عدالت سے سزا یافتہ مجرم ہیں۔ میڈیا پر تقریر نہیں کر سکتے۔

درخواستگزار نے نوازشریف پرپابندی عائد کرنے کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ عدالت پیمرا کو پابند کرے کہ نواز شریف کی تقریر آئندہ ٹی وی چینل پر نشر نہ کی جائے۔

شہری عامر عزیز نے نوازشریف کی تقاریر روکنے کیلئے درخواست دائر کی جس میں چیئرمین پیمرا، نواز شریف، شہبازشریف اور دیگر کو فریق بنایا گیا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment