عدالت کا پی ٹی وی، پارلیمنٹ حملہ کیس میں عمران خان کی بریت کی درخواست پر دوبارہ دلائل طلب

انسداددہشتگردی عدالت نے پی ٹی وی، پارلیمنٹ حملہ کیس میں وزیراعظم عمران خان کی بریت کی درخواست پر دوبارہ دلائل طلب کرلیے۔

انسداد دہشت گردی عدالت کے جج راجہ جواد عباس نے کیس کی سماعت کی۔ دوران سماعت وزیراعظم عمران خان کے وکیل نے دلائل دیئے کہ وزیراعظم عمران خان کی بریت کی درخواست پر دیئے گئے دلائل کو 6 ماہ سے زائد کا عرصہ گزر چکا۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ ہے اگر دلائل سننے کے بعد 3 ماہ تک فیصلہ نہ ہو سکے تو دوبارہ دلائل دیئے جائیں گے۔ عدالت وزیراعظم عمران خان کی بریت کی درخواست پر دوبارہ دلائل دینے کا موقع دے۔

یاد رہے کہ مسلم لیگ (ن) کی گزشتہ حکومت کے خلاف 2014 میں پاکستان تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک کی جانب سے اسلام آباد میں دیے گئے 126 روزہ دھرنے کے دوران ہنگامہ ہوا اور کارکنان نے پی ٹی وی اور پارلیمنٹ پر دھاوا بھی بولا تھا۔

اس موقع پر ریڈزون میں ہنگامہ آرائی پر مقدمہ درج کیا گیا جس میں موجودہ وزیراعظم عمران خان، صدر مملکت عارف علوی، وزیر منصوبہ بندی اسد عمر، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور دیگر نامزد ہیں۔

عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے 19 اکتوبر کو دوبارہ دلائل دینے کی ہداہت کردی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment