ادارے جرم تسلیم کرکے قوم سے معافی مانگیں، مولانافضل الرحمان

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جمہوری قوتوں کی تحریک چل پڑی ہے۔ اب یہ تحریک وقت رکے گی جب ادارے اپنے جرم کو تسلیم کرلیں۔ قوم سے معافی مانگ لیں گے۔

مولانا فضل الرحمان نے عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اگر یہ سلیکٹڈ ہے تو کوئی تو سلیکٹر تو ہے۔ مگر سیلیکٹر کہتے کہ میرا نام نہ لینا۔ کیسے نام نہ لیں۔ آپ نے چوراہے پر جمہوریت کو چوراہے پر ذبح کرکے ایک نا اہل کو مسلط کیا ہے۔ جمہوریت کے قتل کا ذمہ دار کون ہے۔ میں پوچھنے کا حق رکھتا ہوں کہ اپنے سلیکٹڈ کی کارکردگی پر ان کے سلیکٹرز شرمندہ ہیں یا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہماری فوج سے لڑائی نہیں لیکن آپ اپنے آئینی فرض دفاع سے ہٹ کر سیاست کریں گے۔ آئین توڑ کر مارشل لا نافذ کریں گے اور اقتدار پر قبضہ کریں گے۔ انتخابات کو ہائی جیک اور دھاندلی کریں گے تو پھر آپ کے خلاف کلمہ حق بلند کرنا ہمارا کام ہے۔ ہم پاکستان کی سیاست کو اس طرح مقید اور یرغمال نہیں دیکھنا چاہتے۔ ووٹ کے حق پر ڈاکہ ڈالا گیا ہے، ہم یہ عوام کو یہ حق دلانا چاہتے ہیں۔

مولانا نے کہا کہ ادارے کیوں اپنی حدود سے تجاوز کرکے عوام کے کاموں میں مداخلت کرتے ہیں۔ اس طرح ملک نہیں چل سکتے۔ آپ نے جمہوریت کے چہرے کو گرد آلود کردیا ہے۔ عوام اپنے خون پسینے سے یہ گرد ہٹائیں گے۔ جعلی حکمران اپنے انجام کو پہنچنے والے ہیں۔ ان کا پوچھنے والا بھی کوئی نہیں ہوگا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment