کوئی سلائی مشین، کوئی پاپاجونز سے ارب پتی بن گیا، بلاول بھٹو

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ کے الیکٹرک اور عمران کا فرنٹ مین عالمی کرپشن میں بیرون ملک پکڑا گیا۔ عمران خان خود ایف آئی اے کو کہتا ہے کہ میرے دوست کو کلین چٹ دو۔ کوئی سلائی مشین سے ارب پتی بنتی ہے۔ کوئی بابا جونز پیزا سے ارب پتی بنتا ہے۔ ان کے دوستوں کے نام پاناما میں ہیں مگر کوئی پوچھنے والا نہیں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ چینی میں کرپشن، آٹے میں ادویات اور پیٹرول میں کرپشن، یہاں تک کہ درختوں میں بھی کرپشن اور عام آدمی کیلئے تھانوں، کچہریوں میں کرپشن بھری ہے۔ ان کے اپنے لوگ کہہ رہے ہیں کہ کرپشن میں اضافہ ہوا۔ ٹرانسپیرنسی بھی یہی کہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ گوجرانوالہ والوں سے صرف ایک سوال ہے، کیا تبدیلی پسند آئی۔ آج جو کسان گندم اگاتا ہے، اس کے پاس دو وقت کی روٹی نہیں، جو مزدور گھر بناتا ہے اس کے سر پر چھت نہیں، جو مزدور کپڑا بناتا ہے، اس کے پاس دو جوڑے نہیں۔ پاکستان کی معیشت تاریخ میں پہلی بار منفی گروتھ میں ہے۔ جب پاکستان ٹوٹا تب بھی ہم نے یہ حالات نہیں دیکھے تھے۔ عالمی معاشی بحران میں بھی ہم نے یہ حال نہیں دیکھا تھا۔

بلاول نے کہا کہ تبدیلی یہ ہے کہ آج پاکستان میں تاریخی مہنگائی ہے۔ آج تاریخی غربت اور تاریخی بیروزگاری ہے۔ تبدیلی یہ ہے کہ انڈے 200 روپے درجن، آلو 100 روپے کلو، ٹماٹر 200 کلو، پیاز 80 روپے کلو ہوگئی۔ غریب غریب تر ہوتا جارہا ہے، سفید پوش کا جینا حرام ہوچکا ہے محنت کش اور مزدور کے چولہے، تاجروں کی دکانیں، صنعتکاروں کی ملیں اور فیکٹریاں بند ہیں۔ یہ عمران خان کی تبدیلی جس میں ہر طرف بحران ہی بحران ہے۔ آٹے، چینی، ادویات، بجلی، گیس کا بحران ہے۔

انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ کہتے ہیں کہ سب ماضی کے حکمرانوں کا قصور ہے کیا بھگوڑا، سرٹیفائیڈ غدار مشرف نے بحران نہیں چھوڑا تھا۔ ہر دوسرے دن دہشت گرد حملے ہوتے تھے، ہم نے پھر بھی بی بی کا وعدہ نبھایا اور سوات میں پاکستان کا پرچم لہرایا۔ ہمارے دور میں بھی بحران تھے، ایک سال میں بحرانوں سے نکلے اور دوسرے سال خود کفیل ہوگئے۔ ہم نے کبھی عوام کو لاوارث نہیں چھوڑا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment