امریکی میں قید عافیہ صدیقی نے رحم کی اپیل پر دستخط کر دیئے

اسلام آباد: گزشتہ روز ایوان بالا کو بتایا گیا ہے کہ افغانستان میں حراست کے دوران امریکی فوج اور ایف بی آئی کے افسران پر فائرنگ کے الزام پر امریکی عدالت سے سزا پانے والی قیدی پاکستانی نیورو سائنسدان ڈاکٹر عافیہ صدیقی نے آخر کار رحم کی درخواست پر دستخط کردیئے ہیں۔

پارلیمانی امور سے متعلق وزیر اعظم کے مشیر بابر اعوان نے ایوان بالا میں سوالیہ سیشن کے دوران کہا کہ اس سے قبل ڈاکٹر صدیقی کو رحم کی درخواست دائر کرنے پر تحفظات تھے ، لیکن اب انہوں نے اس پر دستخط کردیئے ہیں اور اس درخواست کو امریکی حکام کو جیل حکام کے ذریعے بھیجا جارہا ہے۔

بابر اعوان نے کہا کہ اگر ہمارے پاس طاقت ہوتی تو ہم 24 گھنٹوں میں عافیہ صدیقی کو پاکستان لاتے۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر صدیقی کو ای میل تک رسائی حاصل ہے جس کے ذریعے وہ اپنے کنبہ اور وکیل سے رابطے میں رہتی ہیں۔

اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عافیہ نے متعدد بار ٹیلیفون کے ذریعے امریکہ میں پاکستان سفارت خانے کے عہدیداروں سے بھی بات کی ہے۔

مشیر نے کہا کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی اور ایمل کانسی کو امریکہ کے حوالے کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جاسکتی ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment