پشاور میں پی ڈی ایم نے حکومتی اجازت کے بغير ہی جلسے کے لیے پنڈال سجا لیا

ضلعی انتظامیہ سے اجازت نہ ملنے کے باوجود پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم ) نے پشاور میں جلسے کے لیے پنڈال سجالیا ہے۔

پشاور میں آج ہونے والے جلسے کی تمام تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں اور رہنماؤں نے جوشیلے خطاب کے لیے تقاریر بھی تیار کر لی ہیں۔

آج صبح گیارہ بجےہونے والے جلسے کے لیے دلزاک روڈ چوک پر پوسٹر اور بینر آویزاں کر دیے گئے ہیں جب کہ ساؤنڈ سسٹم بھی لگا دیاگیا ہے۔

پیپلزپارٹی، ن لیگ، اے این پی اور پی ڈی ایم میں شامل دیگر جماعتوں کے رہنماؤں کا کہنا ہے کہ جلسے کے لیے کسی کی اجازت کی ضرورت نہیں وہ پاکستان بچانے نکلے ہیں۔

پیپلزپارٹی کی جانب سے جلسہ گاہ پر رات گئے آتشبازی کی گئی، آتشبازی کے اس شاندار مظاہرے سے جیالوں کا جوش اور بڑھ گیا۔

سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ ناجائزحکمراں بذات خود کورونا ہیں، ملک میں ناجائز حکومت کے خلاف تحریک جوبن پر ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ ایک ٹرمپ چلا گیا، اب پاکستانی ٹرمپ کو بھی چلتا کریں گے۔

پی ڈی ایم کے کارکنوں کا کہنا ہےکہ گوجرانوالہ، کراچی اور کوئٹہ کی طرح پشاور میں بھی تاریخی جلسہ کیا جائے گا۔

دوسری جانب پی ڈی ایم جلسے کے باعث پشاورضلع میں صبح سے لیکر رات تک بڑی گاڑیوں کا داخلہ بند کر دیا گیا ہے جب کہ اسلام آباد سے آنے والوں کو مردان رشکئی انٹرچینج پر اترکر نوشہرہ جی ٹی روڈ پیرزکوڑی پل کا راستہ استعمال کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

پشاور میں داخلے کے لیے آنے والےافراد کو چارسدہ روڈ کا راستہ اختیار کرنا ہو گاجب کہ جنوبی اضلاع سے آنے والے فرنٹیئر روڈ متنی سے سربند اور باڑہ روڈ کے راستے رنگ روڈ سے پشاور میں داخل ہوں گے۔

واضح رہے کہ ملک میں کورونا کی دوسری لہر میں شدت آنے کے بعد حکومت کی جانب سے 300 سےزیادہ افراد کے تمام آؤٹ ڈور اجتماع پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

اعلامیے کے مطابق ایس او پیز پر عملدرآمد کی ذمہ داری اجتماع کے منتظمین پر ہوگی،کورونا کی وجہ سےموت یا کورونا پھیلنے پر آرگنائزر ذمہ دار ہوں گے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment