واٹس ایپ نے اپنے صارفین کے لیے نئے احکامات جاری کر دئیے


واٹس ایپ کی نئی شرائط اور پالیسیوں کو قبول نہ کرنے والے صارفین اب پیغامات کا تبادلہ نہیں کرسکیں گے۔

دی ورج کی رپورٹ کے مطابق کمپنی نے صارفین کو 15 مئی تک کی ڈیڈ لائن دی ہے کہ وہ نئی پالیسی قبول نہ کرنے والوں کااکاونٹ کو 120 دن یعنی 4 مہینے تک غیر فعال رکھا جائیگا اور اس کے بعد ڈیلیٹ کردیا جائیگا۔

صارفین کاؤنٹ غیرفعال ہونے باوجود صارفین کالز کرسکیں گے اور نوٹیفکیشن بھی وصول کرتے رہیں گے۔ واٹس ایپ نے جنوری 2021 میں اپنی پالیسی اپڈیٹ کی تھی جس پر صارفین کی جانب سے سخت ردعمل کا بھی سامنا تھا۔

واٹس ایپ نے صارفین کیلیے اپنی اپڈیٹس پالیسی کے نوٹیفکیشنز بھیجے تھے جن کے مطابق 8فروری تک پالیسی قبول نہ کرنے والے صارفین کے اکاؤنٹ ڈیلیٹ کرنے تھے تاہم صارفین کی جانب سے سخت رد عمل کے بعد کمپنی میں تاریخ تبدیل کی اور صارفین کو مئی تک کا وقت دیا تھا۔

واضح رہے کہ نئی پالیسی کے مطابق واٹس ایپ صارفین کا ڈیٹا ناصرف استعمال کرے گا بلکہ اس فیس بک کے ساتھ شئرکرے گا۔

پالیسی کے مطابق واٹس ایپ سروس استعمال کرتے ہوئے آپ کسی دوسرے بزنس ساتھ رابطے میں آتے ہیں تو اس کی تمام معلومات کمپنی کے پاس پہنچ جاتی ہیں جس کو فیس بک کی زیر ملکیت دیگر ایپلکیشنز سے شئیر کیا جاتاہے۔

واٹس ایپ کی جانب سےجاری نئی پالیسی کے مطابق ادارے کو اپنی مارکیٹنگ سپورٹ تبدیلیاں اور سروسز کو بہتر بنانے کے لیے صارفین کی معلومات درکار ہیں، جونئی پالیسی کو قبول کیے بغیر حاصل نہیں کی جاسکتیں۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.