اسلام آباد : شہری نے ذاتی سگنل بوسٹر لگا لیا، انتظامیہ نے نوٹس جاری کر دیا


اسلام آباد کے رہائشی کو غیر قانونی جی ایس ایم سگنل بوسٹر استعمال کرنے پر  نوٹس جاری کر دیا گیا ہے۔

پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی نے غیر قانونی موبائل سگنل بوسٹر کے استعمال پر اسلام آباد کے ایک رہائشی کو شوکاز نوٹس جاری کردیا ہے۔ نوٹس کے مطابق، فریکوئنسی الاٹیکشن بورڈ (ایف اے بی) کے ذریعہ معمول کی نگرانی کے دوران اسلام آباد کے ایف 11 سیکٹر میں اس خلاف ورزی کی نشاندہی کی گئی۔

پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی کے حکام کے مطابق
یہ اختیار اتھارٹی کے پاس ہے کہ وہ تمام وائرلیس نیٹ ورکس کے لئے متعلقہ تکنیکی پیرامیٹرز کے ساتھ اتھارٹی فریکوئنسیوں کو تفویض کرے۔ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ جی ایس ایم ایمپلیفائر غیر قانونی ہیں اور مجاز اتھارٹی کے کام میں مداخلت کا باعث ہیں جو مروجہ قانونی ریگولیٹری حکومت اور پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن ری آرگنائزیشن ایکٹ 1996 کی خلاف ورزی ہے۔

شہری کو خبردار کیا گیا ہے کہ وہ جی ایس ایم سگنل بوسٹر کا استعمال بند کرے اور اسے پی ٹی اے / ایف اے بی ٹیم کے حوالے کرے۔

اتھارٹی نے نوٹس میں مذکورہ شہری کو کہا ہے کہ وہ اتھارٹی کو بتائے کہ اس بوسٹر کے پرزہ جات کہاں سے لیے گئے ہیں۔اگر تفصیلات سے آگاہ نہ کیا گیا تو اس کیس کو فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کو بھیج دیا جائے گا ۔

خیال رہے کہ جی ایس ایم سگنل بوسٹر کا غیر قانونی استعمال آپ کو جیل بھیج سکتا ہے۔ پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے) نے جی ایس ایم بوسٹرز کے استعمال پر سختی سے پابندی عائد کر رکھی ہے اور جو بھی شخص اس طرح کی مصنوعات کی درآمد ، تقسیم یا اس کا استعمال کرتے پایا گیا تو پاکستان ٹیلی مواصلات (دوبارہ تنظیم) ایکٹ 1996 (ایکٹ) کے تحت قانونی کارروائی کر سکتی ہے۔’ریڈیو فریکوینسی اسپیکٹرم کے غیر قانونی استعمال پر 3 سال تک کی قید کی سزا ہوسکتی ہے


Leave A Reply

Your email address will not be published.