چین نے ایک دفعہ پھر بھارت کو نظر انداز کر دیا


چین نے انڈیا سمیت جنوبی ایشیائی ممالک میں کورونا وبا کے پھیلاؤ کی صورتحال کے بارے میں جنوبی اشیائی ممالک کے اجلاس میں کہا ہے کہ چین کورونا کی وبا پر قابو پانے کے لیے جنوبی ایشیائی ممالک کو ویکسین فراہم کرے گا۔

چین کے وزیر خارجہ وانگی یی نے منگل کو کورونا وبا پر قابو پانے کے لیے جنوبی ایشین ممالک کو چینی ویکسین دینے کی تجویز پیش کی۔ انھوں نے کہا کہ چین انڈیا کی بھی مدد کرنے کے لیے تیار ہے۔

چینی وزیر خارجہ چوتھے کثیرالجہتی مکالمے سے خطاب کر رہے تھے ، جس میں پاکستان، افغانستان ، بنگلہ دیش ، چین ، نیپال اور سری لنکا کے وزرائے خارجہ بھی شامل تھے۔ چین نے یہ اقدام جنوبی ایشیا میں کورونا وبا کے دوران اٹھایا ہے لیکن اس اجلاس میں اس نے انڈیا ، بھوٹان اور مالدیپ کو شرکت کے لیے دعوت نہیں دی تھی۔ اس سے قبل بھی چین نے نیپال ، افغانستان ، پاکستان اور سری لنکا کے وزرائے خارجہ سے ملاقات کی تھی۔

چین کے وزیر خارجہ وانگ یی نے انڈیا میں کوروناکی دوسری لہر کے دوران تباہی پر اظہار ہمدردی اور مدد کی پیش کش بھی کی ہے۔ وانگ یی نے کہا کہ ’چین ضرورت کے مطابق کسی بھی وقت انڈیا کی عوام کی مدد کرنے کے لیے تیار ہے۔ ہم بنگلہ دیش ، پاکستان ، سری لنکا ، نیپال اور افغانستان کی کورونا کے خلاف لڑائی میں مدد کر رہے ہیں۔ ہم ٹھوس انداز میں جنوبی ایشیا میں ویکسین کی فراہمی چاہتے ہیں۔‘

وانگ یی نے کہا کہ جو لوگ چین کے بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے میں شامل ہیں ، ان ممالک میں غربت کو کم کرنے کے لیے تیزی سے کام کرنے کی ضرورت ہے۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.