Khabarnamay

طاقت، غرور اور کرونا

شہروز اظہر

دنیا کے تمام ترقی پذیر اور ترقی یافتہ ممالک آج ایک ہی پیج پر آ چکے ہیں ، اک دوسرے کو للکارنے اور ڈرانے والے ممالک آج باہمی مدد کو ترستے نظر آتے ہیں ۔ کرونا کی دھاڑ ایسی تھی کہ سب بھیگی بلی بن کر بیٹھ گئے ۔ کسی کو اپنی معشیت اور کسی کو اپنی انفرادی زندگی بچانے کے لالے پڑنے لگے ۔ بڑے بڑے ممالک کا غرور اس کرونا نے ایسا غرق کیا جس کی مثال ہمیں تاریخ میں کہیں نہیں ملتی ۔ اس بات پر ہمارا پختہ یقین ہے اور آج ثابت بھی ہوگیا کہ دنیا کی ہر طاقت کو شکست اور ہر عروج کا زوال برحق ہے ۔

امریکہ جیسی طاقت بھی آج اس کرونا وائرس کے اگے بے بس ہے ، آج نہ ہی امریکہ کی دولت اُسے اس وائرس سے نجات دلا سکتی ہے اور نہ ہی اسکی طاقت کا غرور اسے اپنے سائے تلے چھپا سکتا ہے- برطانیہ ، فرانس ، اٹلی اور ایسی بہت سی بڑی ریاستیں بھوکھ اور افلاس کی زندگی کے دھانے پر آپہنچی ہیں۔

حال میں ہی آئی ۔ایم -ایف سٹاف کیلکولیشن کی جانب سے ایک ایکنامک رپورٹ پیش کی گئی جس میں دنیا بھر میں کورونا کے باعث 9 ٹرلین ڈالز کا مالی نقصان ریکارڈ کیا گیا ۔اس کے برعکس دنیا بھر میں ابھی تک کورونا سے ہونے والی اموات کی تعداد 5 لاکھ تک جا پہنچی ہیں۔

ایک بات یہاں زیر غور ہےکہ جب سے اس وباء نے دنیا میں ڈیرے ڈالے ہیں تب سے نا تو پاکستان میں کوئی دھماکہ ہوا ہے اور نا ہی ایران اور امریکہ میں کشیدگی بڑھی ہے، نا ہی شام سے کوئی افسوس ناک خبر سامنے آئی ہے ۔ اس کی بڑی وجہ یہ ہی ہو سکتی ہے کہ اس وقت دہشت گرد صفت کے حامل ممالک اس وائرس سے لڑنے میں مصروف ہے ۔ تاحال پاکستان اور بھارت کشیدگی میں بھی نرمی دیکھنے کو مل رہی ہے ۔ جس کی بڑی وجہ بھارت کا اس وائرس سے بری طرح متاثر ہونا ہے ۔

اس وائرس نے باقی ممالک کی طرح پاکستان کو بھی 1.3 ٹرلین روپے کا معاشی نقصان پہنچایا ہے جس کے اثرات ہم جیسے لوگوں پر ہوئے ہیں ، کسی کی نوکری گئی تو کسی کی کوٹھری۔ غربت کی شرح تاریخ میں اس قدر بلد ترین سطح تک نہیں پنچی جہاں اب جا چکی ہے ۔

کسی انسان کو یہ اندازہ نہیں کہ یہ وائرس کب ختم ہو گا لیکن باحثیت مسلمان ہم اللہ سے دعا کر سکتے ہیں کہ کوئی ایسا بڑا نقصان نہ ہو جس کا ازالہ ہم پوری زندگی نہ اتار سکیں ۔

ماسک کا استعمال یقینی بنائیں، اپنا خیال رکھیں اپنے لئے اپنے پیاروں کے لئے۔ 

اب کیا بات ہے خطرے کی، اب سبھی کو سبھی سے خطرہ ہے ۔ 

آپ کے مزاج کے مطابق مزید تحاریر