Khabarnamay

ایران نے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے خلاف امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے

ویب ڈیسک ۔ ایران نےعراق میں مارے جانے والے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے خلاف امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے۔

 

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق ایران نے پاسدارانِ انقلاب کے سابق کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کے قتل میں 36افراد کی نشاندہی کی ہے اور انٹرپول سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سمیت تمام افراد کی گرفتاری کی درخواست کی ہے۔

 

ایرانی حکام کے مطابق ٹرمپ سمیت 36 افراد پر 3 جنوری کو ایران میں دہشت گردی اور جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت میں ملوث ہیں اور انہیں ان مقدمات کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ایرانی پراسیکوٹر نے ٹرمپ کے علاوہ کسی اور شخص کی شناخت نہیں ظاہر نہیں کی ، تاہم انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ایران ڈونلڈ ٹرمپ کی صدارت ختم ہونے کے بعد بھی ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی جاری رکھے گا۔

 

ایرانی پراسیکوٹر نے مزید کہا کہ ایران نے انٹرپول سے ٹرمپ سمیت دیگر افراد کے ”ریڈ نوٹس“ جاری کرنے کی درخواست کی ہے ، انٹرپول کے اعلیٰ حکام کی جانب سے جاری ہونے والے اس نوٹس کے ذریعے نامزد شخص کی کسی بھی جگہ گرفتاری کی جاسکتی ہے۔

 

یاد رہے اس سال تین جنوری کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر امریکہ کی جانب سے راکٹ حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں پاسداران انقلاب کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی سمیت عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر ابومهدی المهندس بھی مارے گئے تھے۔

آپ کے مزاج کے مطابق مزید تحاریر